پنجاب حکومت نے 3 ہزار سے زائد ترقیاتی منصوبوں کے لیے 131 ارب روپے جاری کردیئے


Post Views:
3

لاہور: پنجاب فنانس ڈیپارٹمنٹ نے 3 ہزار سے زائد ترقیاتی منصوبوں کے لیے 131 ملین روپے جاری کردیئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق چیئرمین پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ بورڈ عبداللہ خان سنبل کی زیرِ صدارت پی اینڈ ڈی کمپلیکس میں ایک اجلاس ہوا۔

جاری منصوبوں کے لیے تمام تر فنڈز یکم جولائی 2021 کو جاری کیے گئے۔

اجلاس کو یہ بھی بتایا گیا کہ 4,680 منصوبوں میں سے 3,179 منصوبے منظور کر لیے گئے ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




سندھ میں مختلف ترقیاتی منصوبوں کے لیے 32.4 ارب روپے جاری


Post Views:
0

کراچی: وزیرِ اعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے پیر کے روز اعلان کیا کہ سندھ میں مختلف ترقیاتی منصوبوں کے لیے 32.4 ارب روپے جاری کردیئے گئے ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ سندھ واحد صوبہ ہے جس نے مالی سال کے پہلے ہفتے میں ہی ترقیاتی بجٹ ریلیز کردیا ہے۔

اس ضمن میں لوکل باڈیز کے فنڈز میں پچھلے مالی سال کی نسبت 15 فیصد اضافہ کیا گیا ہے تاکہ ترقیاتی منصوبوں کا فائدہ نچلی سطح تک ہو۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




کراچی میں ترقیاتی منصوبوں کے لیے 9 ارب روپے جاری کردیئے گئے


Post Views:
2

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے کراچی میں جاری ترقیاتی منصوبوں کے لیے 9 ارب روپے کی رقم جاری کردی ہے۔

یہ اعلان وفاقی وزیر علی زیدی نے کیا جن کا کہنا تھا کہ کراچی میں کے فور واٹر سپلائی پراجیکٹ اور گرین لائن بس ریپڈ ٹرانزٹ پراجیکٹ پر کام تیزی سے جاری ہے اور اِن منصوبوں کو جلد مکمل کیا جائے گا۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




راولپنڈی ڈیولپمنٹ اتھارٹی نے شہر میں جاری اور نئے منصوبوں کے لیے 1.984 ارب روپے مختص کر دیے


Post Views:
4

راولپنڈی: راولپنڈی ڈویلپمنٹ اتھارٹی (آر ڈی اے) نے شہر میں جاری اور نئے ترقیاتی منصوبوں کے لیے 1.984 ارب روپے مختص کر دیے ہیں۔ آئندہ مالی سال کے شہری ترقیاتی بجٹ میں آر ڈی اے کے لیے مجموعی طور پر 2.379 ارب روپے مختص کیے گئے تھے۔

شہری ترقیاتی بجٹ کے جائزہ کے لیے ڈائریکٹر جنرل آر ڈی اے کی سربراہی میں فنانس کی سب کمیٹی کا ایک اہم اجلاس منعقد ہوا جس میں آئندہ مالی سال کے شہری ترقیاتی بجٹ کے حوالے سے تفصیلی تبادلہ خیال کیا گیا۔

راولپنڈی شہر میں جاری ترقیاتی منصوبوں میں ڈرائی پورٹ روڈ کی بہتری کے لیے 5 کروڑ، ایئرپورٹ روڈ پر پیدل چلنے والوں کے لیے پلوں کی تعمیر سے متعلق تعمیراتی کاموں کے لیے 6 کروڑ 90 لاکھ روپے جبکہ ترقیاتی بجٹ میں ڈیفنس چوک کی بحالیِ نو کے منصوبے کے لیے 30 کروڑ مختص کیے گئے ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




کراچی میں 10 ارب کے ترقیاتی منصوبے جاری، گورنر سندھ


Post Views:
0

کراچی: گورنر سندھ عمران اسماعیل نے منگل کے روز کہا کہ کراچی میں 10 ارب روپے کے ترقیاتی منصوبے جاری ہیں جبکہ اندرون سندھ میں ترقیاتی منصوبوں کے لیے 450 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

اُن کا کہنا تھا کہ اندرون سندھ کے لیے مختص کردہ بجٹ کا 70 فیصد جاری کردیا گیا ہے۔

گورنر سندھ نے منگل کے روز کراچی کے مختلف علاقوں کا دورہ کیا اور وہاں جاری ترقیاتی منصوبوں کا جائزہ لیا۔

اُن کا کہنا تھا کہ سندھ کو ترقی یافتہ بنانا حکومت کی اولین ترجیح ہے اور اس ضمن میں کوئی کوتاہی نہیں برتی جائے گی۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




راولپنڈی میں جاری ترقیاتی منصوبوں کو بر وقت پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے: راجہ عامر کیانی


Post Views:
1

راولپنڈی: پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی راجہ عامر کیانی نے کہا ہے کہ ضلع راولپنڈی میں جاری ترقیاتی منصوبوں کو بر وقت پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے کارکردگی پر کسی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے جم خانہ راولپنڈی میں ضلعی رابطہ کمیٹی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں ضلع راولپنڈی میں جاری ترقیاتی منصوبوں پر ہونے والی پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔

انہوں نے انتظامی حکام کو ہدایات جاری کیں کہ کہ پانی کی قلت کو پورا کرنے کے کے لیے چھوٹے ڈیمز پر کام تیز کیا جائے تاکہ شہریوں کو پینے کا صاف پانی میسر آ سکے۔

عامر کیانی نے کہا کہ پاکستان کی ترقی و خوشحالی کے لیے وزیر اعظم عمران خان دن رات کوشاں ہے اور آئندہ آنے والے دنوں میں عوام کو واضع تبدیلی نظر آئے گی۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




ایس ای سی پی نے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ کے ضوابط میں ترامیم کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا | Graana.com Blog


Post Views:
3

اسلام آباد: سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) نے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ (آر ای آئی ٹی) کے ریگولیٹری فریم ورک کو مزید فعال بنانے اور اس شعبے میں سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ ریگولیشنز 2015 میں اہم ترامیم کر دی ہیں۔

ان ترامیم کے حوالے سے ایس ای سی پی کی جانب سے باقاعدہ نوٹیفیکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔  ایس ای سی پی نے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ کے تحت سرمایہ کاری کا ایک نیا ماڈل پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ متعارف کروایا ہے۔

ضوابط میں کی گئی ترامیم میں ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ منصوبے میں سرمایہ کاری کرنے کی اہلیت میں تبدیلی، لازمی لسٹنگ کی مدت میں مزید مہلت، ریئل انویسٹمنٹ منصوبے کے ٹرانسفر کے وقت دو مختلف ویلوئرز، رائٹ شیئرز کے اجراء اور قرض کے حصول کے لیے ریئل اسٹیٹ مینجمنٹ کمپنی کی حد میں اضافہ وغیرہ شامل ہیں۔

ریئل اسٹیٹ انوسٹمنٹ ٹرسٹ ریگولیشنز میں نئی ترامیم کے تحت روایتی اور جدید تعمیراتی شعبے کو دو واضح حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے جن میں ایک بزنس ماڈل پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ جبکہ دوسرا ماڈل سرکاری یا پھر نجی انفرادی حیثیت میں کاروباری سرگرمیوں میں حصہ لے سکے گا۔

ایس ای سی پی کے مطابق ضوابط میں ترامیم کا مقصد ملک میں ایک باقاعدہ ریئل اسٹیٹ سیکٹر کا قیام اور اس شعبے میں ڈاکومنٹیشن کو فروغ دینا ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔۔




ایس ای سی پی نے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ کے ضوابط میں ترامیم کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا | Graana.com Blog


Post Views:
7

اسلام آباد: سیکورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) نے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ (آر ای آئی ٹی) کے ریگولیٹری فریم ورک کو مزید فعال بنانے اور اس شعبے میں سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ ریگولیشنز 2015 میں اہم ترامیم کر دی ہیں۔

ان ترامیم کے حوالے سے ایس ای سی پی کی جانب سے باقاعدہ نوٹیفیکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔  ایس ای سی پی نے ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ کے تحت سرمایہ کاری کا ایک نیا ماڈل پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ متعارف کروایا ہے۔

ضوابط میں کی گئی ترامیم میں ریئل اسٹیٹ انویسٹمنٹ ٹرسٹ منصوبے میں سرمایہ کاری کرنے کی اہلیت میں تبدیلی، لازمی لسٹنگ کی مدت میں مزید مہلت، ریئل انویسٹمنٹ منصوبے کے ٹرانسفر کے وقت دو مختلف ویلوئرز، رائٹ شیئرز کے اجراء اور قرض کے حصول کے لیے ریئل اسٹیٹ مینجمنٹ کمپنی کی حد میں اضافہ وغیرہ شامل ہیں۔

ریئل اسٹیٹ انوسٹمنٹ ٹرسٹ ریگولیشنز میں نئی ترامیم کے تحت روایتی اور جدید تعمیراتی شعبے کو دو واضح حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے جن میں ایک بزنس ماڈل پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ جبکہ دوسرا ماڈل سرکاری یا پھر نجی انفرادی حیثیت میں کاروباری سرگرمیوں میں حصہ لے سکے گا۔

ایس ای سی پی کے مطابق ضوابط میں ترامیم کا مقصد ملک میں ایک باقاعدہ ریئل اسٹیٹ سیکٹر کا قیام اور اس شعبے میں ڈاکومنٹیشن کو فروغ دینا ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔۔




نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت 45 ہزار ہاؤسنگ یونٹس کی تعمیر جاری


Post Views:
5

اسلام آباد: وزیرِ اعظم کے مشیر برائے پارلیمانی اُمور ڈاکٹر بابر اعوان نے جمعرات کے روز سینیٹ میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت 45 ہزار ہاؤسنگ یونٹس کی تعمیر جاری ہے۔

اُن کا کہنا تھا کہ لاہور، نوشہرہ، اسلام آباد اور پشاور سمیت مُلک بھر میں ہاؤسنگ یونٹس کی تعمیر پر کام جاری ہے۔

بابر اعوان کا کہنا تھا کہ نجی سیکٹر کی جانب سے نیا پاکستان ہاؤسنگ اینڈ ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کو 30 لاکھ سے زائد گھروں کی تعمیر کے لیے 180 پروپوزل جمع کرائے گئے ہیں۔

اُنہوں نے کہا کہ اِن میں سے 45 پراجیکٹ ڈیویلپمنٹ کمپنیاں مختص کرلی گئی ہیں جو کہ 70 ہزار سے زائد ہاؤسنگ یونٹس کی تعمیر کریں گی۔

اُن کا مزید کہنا تھا کہ اسلام آباد میں سرکاری اراضی پر 2300 گھروں کی تعمیر کا منصوبہ بھی جاری ہے اور اسے جلد مکمل کیا جائے گا۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




ایبٹ آباد میں 14 ارب کے روڈ پراجیکٹس پر کام جاری


Post Views:
5

 

پشاور: اسپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی کا کہنا ہے کہ ایبٹ آباد میں 14 ارب کے روڈ منصوبوں پر کام جاری ہے جس سے شہر میں ٹریفک کے مسائل حل ہوجائیں گے۔

 

وہ ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے جہاں اُن کا کہنا تھا کہ سڑکوں سے مواصلاتی نظام میں بہتری ممکن ہوگی اور مقامی لوگ اس سے استفادہ کر سکیں گے۔

 

اُن کا کہنا تھا کہ ایبٹ آباد ڈسٹرکٹ میں صحت، تعلیم اور انفراسٹرکچر پر کام جاری ہے اور لوگ جلد شہر کی صورتحال کو بدلتا ہوا دیکھیں گے۔

 

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




ایبٹ آباد میں 14 ارب کے روڈ پراجیکٹس پر کام جاری


Post Views:
8

پشاور: اسپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی کا کہنا ہے کہ ایبٹ آباد میں 14 ارب کے روڈ منصوبوں پر کام جاری ہے جس سے شہر میں ٹریفک کے مسائل حل ہوجائیں گے۔

وہ ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے جہاں اُن کا کہنا تھا کہ سڑکوں سے مواصلاتی نظام میں بہتری ممکن ہوگی اور مقامی لوگ اس سے استفادہ کر سکیں گے۔

اُن کا کہنا تھا کہ ایبٹ آباد ڈسٹرکٹ میں صحت، تعلیم اور انفراسٹرکچر پر کام جاری ہے اور لوگ جلد شہر کی صورتحال کو بدلتا ہوا دیکھیں گے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




سی پیک کے تحت 1100 کلومیٹر روڈ نیٹ ورک مکمل، مزید 850 پر کام جاری


Post Views:
6

اسلام آباد: پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کے تحت اب تک 1100 کلومیٹر پر محیط روڈ نیٹ ورک کا قیام کیا جا چُکا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مزید 850 کلومیٹر کے روڈ نیٹ ورک پر کام جاری ہے۔

ورلڈ اکنامک فورم کے تحت پاکستان کا روڈ نیٹ ورک ایران، روس، بنگلہ دیش، ویتنام سمیت خطے کے دیگر ممالک سے بہت بہتر ہے۔

سی پیک اور این ایچ اے کی شراکت سے ملک بھر میں سڑکوں کی صورتحال بہتر ہورہی ہے جس سی آمد و رفت اور سامان کی ترسیل میں تیزی آ رہی ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔