جنوبی پنجاب کے 11 اضلاع کے لیے صوبائی ترقیاتی بجٹ میں 189 ارب روپے مختص


Post Views:
1

ملتان: پنجاب حکومت نے جنوبی پنجاب کے 11 اضلاع کے لیے آئندہ مالی سال کے ترقیاتی بجٹ میں 189 ارب روپے مختص کیے ہیں۔

دستاویزات کے مطابق پنجاب کے ترقیاتی بجٹ میں جنوبی پنجاب کیلئے تعمیراتی شعبے، سکول ایجوکیشن ، ہائیر ایجوکیشن ، پرائمری اور سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر، واٹر سپلائی، زرعی شعبے، انڈسٹری اور دیگر شعبوں کی ترقی کیلئے 35 فیصد بجٹ مختص کیا گیا ہے۔

جنوبی پنجاب کے 11 اضلاع میں سڑکوں کی تعمیر کیلئے آئندہ مالی سال کے صوبائی ترقیاتی بجٹ میں 22.520 ارب روپے، نہروں کی بحالیِ نو کے لیے 7.901 ارب روپے، توانائی کے شعبے کے لیے 1.898 ارب روپے، پبلک بلڈنگز کے لیے 7.679 ارب روپے، شہری ترقی کے لیے 3.967 ارب روپے جبکہ تجارت اور سرمایہ کاری کے شعبے کیلئے 4.057 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

صوبائی ترقیاتی بجٹ میں جنوبی پنجاب کے شعبہ سکول ایجوکیشن کے لئے 15.362 ارب روپے اور ہائیر ایجوکیشن کیلئے 4.866 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ




پنجاب کےشہری ترقیاتی بجٹ میں 30 فیصد اضافہ


Post Views:
0

لاہور: پنجاب حکومت نے آئندہ مالی سال کے ترقیاتی بجٹ میں شہری ترقی کے لیے رواں مالی سال کے مقابلے میں 30 فیصد اضافی فنڈز مختص کیے ہیں۔ اگلے مالی سال کے شہری ترقیاتی بجٹ کے لیے 34 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں جو کہ رواں مالی سال کے لیے منظور شدہ بجٹ سے 7.8 ارب روپے زیادہ ہیں۔

پنجاب حکومت نے آئندہ مالی سال کے بجٹ میں لاہور کی مرکزی اور تجارتی اہمیت کے پیش نظر ترقیاتی منصوبوں کے لئے 28 ارب 30 کروڑ روپے کی رقم مختص کی ہے جس کے تحت شہر میں انفراسٹرکچر کے میگا پروجیکٹس لگائے جائیں گے۔

جنوبی پنجاب کی شہری ترقی کے منصوبوں کے لیے مجموعی طور پر 3.966 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں جن میں سے 1.87 ارب روپے جاری  منصوبوں جبکہ بقایا 2.089 ارب روپے نئی شہری ترقیاتی اسکیموں کے لیے رکھے گئے ہیں۔

آئندہ مالی سال کے صوبائی ترقیاتی بجٹ میں مجموعی طور پر جاری اسکیموں کی تعداد 114 بتائی گئی ہے جبکہ  378 نئی ترقیاتی اسکیموں کا بھی اجراء کیا گیا ہے۔

 




آئندہ مالی سال کے ترقیاتی بجٹ میں سی پیک منصوبوں کے لیے 87 ارب روپے مختص


Post Views:
3

اسلام آباد: آئندہ مالی سال کے ترقیاتی بجٹ میں وفاقی حکومت نے سی پیک منصوبوں کے لیے مجموعی طور پر 87 ارب روپے مختص کر دیے ہیں۔

قومی اقتصادی کونسل پہلے ہی سی پیک منصوبوں میں شامل مغربی روٹ کی تکمیل کے لیے 42 ارب روپے جبکہ ریلوے ٹریک ایم ایل ون منصوبے کے لیے اگلے مالی سال کے ترقیاتی بجٹ میں 6.2 ارب روپے کی منظوری دے چکی ہے۔

آئندہ مالی سال کے لیے وفاقی ترقیاتی بجٹ کا حجم 900 ارب روپے مقرر کیا گیا ہے جبکہ وفاقی وزارتوں کو مجموعی طور پر 672 ارب روپے کا ترقیاتی بجٹ ملے گا۔ ہاؤسنگ و تعمیرات کیلئے 14 ارب 94 کروڑ کا ترقیاتی بجٹ مقرر کیا گیا ہے۔

علاوہ ازیں، وزارت صنعت و پیداوار 3 ارب کا ترقیاتی بجٹ خرچ کرے گی۔ امور جہازرانی و میری ٹائم کیلئے 4 ارب 95 کروڑ، ریلوے ڈویژن کیلئے 30 ارب روپے جبکہ نیشنل ہائی وے اتھارٹی کیلئے ترقیاتی بجٹ میں 113 ارب 95 کروڑ روپے رکھے گئے ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




سی ڈی اے نے اسلام آباد کی تزئین کے لیے 156.35 ارب کا بجٹ منظور کردیا | Graana.com Blog


Post Views:
0

اسلام آباد: کیپٹل ڈویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) نے شہرِ اقتدار میں جاری ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کے لیے 156.35 ارب روپے کا بجٹ منظور کرلیا۔

سی ڈی اے کی جانب سے جاری کردہ بیان میں یہ کہا گیا کہ منگل کے روز چیئرمین سی ڈی اے عامر احمد علی کی زیرِ صدارت سی ڈی اے بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں یہ بجٹ منظور کیا گیا۔

چیئرمین سی ڈی اے نے بورڈ اجلاس میں اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ شہر میں تمام خستہ حال سڑکوں، واکنگ ٹریکس اور پارکس کی حالت بہتر بنائی جائے گی۔

اُن کا کہنا تھا کہ اسلام آباد کی تزئین و خوبصورتی وفاقی ترقیاتی ادارے کی اولین ترجیح ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




قومی اقتصادی کونسل آج 2,135 ارب روپے کے ترقیاتی بجٹ کی منظوری دے گی


Post Views:
2

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی اقتصادی کونسل کا اجلاس آج ہوگا۔ اجلاس میں چاروں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ سمیت دیگر ارکان شرکت کریں گے۔

کونسل آئندہ مالی سال کے ترقیاتی بجٹ اور اہم اقتصادی اہداف کی منظوری دے گی۔ آئندہ مالی سال کا وفاقی ترقیاتی بجٹ 900 ارب جبکہ صوبوں کا ترقیاتی بجٹ 1235 ارب روپے رکھنے کی تجویز ہے۔

اسی طرح وفاق اور صوبوں کا مجموعی ترقیاتی بجٹ 2135 ارب روپے رکھنے کی تجویز ہے۔

وزارت منصوبہ بندی ڈویژن کے مطابق آئندہ مالی سال کیلئے شرح نمو کا ہدف 4.8 سے 5 فیصد اور افراط زر کا ہدف 8 فیصد رکھنے کی تجویز ہے ۔

ذرائع کے مطابق وفاقی ترقیاتی بجٹ کے تحت 526 ارب روپے وزارتوں اور ڈویژنز کیلئے رکھنے کی تجویز ہے جبکہ بنیادی ڈھانچے کے منصوبوں کیلئے 558 ارب روپے رکھنے کی تجویز ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




اگلے وفاقی بجٹ میں ٹیکس وصولیوں کا ہدف 5 ہزار 829 ارب مقرر کرنے کا فیصلہ


Post Views:
4

اسلام آباد: ایف بی آر نے اگلے وفاقی بجٹ میں 24 فیصد اضافے کے ساتھ ٹیکس وصولیوں کا ہدف 5 ہزار 829 ارب مقرر کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اگلے وفاقی بجٹ کی تفصیلات کے مطابق سیلز ٹیکس کی مد میں وصولیوں کا ہدف  2 ہزار 506 ارب روپے رکھا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق براہ راست انکم ٹیکس وصولیوں کا ہدف 2 ہزار 182 ارب مقرر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، ان ڈائریکٹ ٹیکسوں کے علاوہ سیلز ٹیکس کی مد میں وصولیوں کا ہدف 2 ہزار 506 ارب ہے۔

فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں وصولیوں کا ہدف 356 ارب روپے، کسٹمز ڈیوٹی کی مد میں وصولیوں کا ہدف 785 ارب، انکم ٹیکس وصولیوں کے لیے گروتھ کا ہدف 22 فیصد اور سیلز ٹیکس وصولیوں میں گروتھ کا ہدف 30 فیصد رکھا جائے گا۔

رپورٹس کے مطابق اگلے مالی سال میں فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی کی مد میں شرح نمو کا ہدف 29 فیصد رکھا جائے گا، کسٹمز ڈیوٹی کی مد میں گروتھ کا ہدف 12.1 فیصد مقرر کرنے، اشیا پر سیلز ٹیکس کی مد میں 2 ہزار 503 ارب 39 کروڑ وصول کرنے کا ہدف مقرر کرنے اور سروسز پر سیلز ٹیکس وصولیوں کا ہدف 2 ارب 61 کروڑ مقرر کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




سی ڈی اے کے لیے ریکارڈ 156 ارب کا بجٹ منظور


Post Views:
2

اسلام آباد: کیپیٹل ڈیویلپمنٹ اتھارٹی (سی ڈی اے) نے اگلے مالی سال کے لئے ریکارڈ 156 ارب روپے کا بجٹ منظور کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق سی ڈی اے بورڈ کی چیئرمین عامر احمد علی سے ملاقات ہوئی جس میں ممبر فنانس شکیل جازیب نے اگلے مالی سال کا بجٹ پیش کیا۔

اسلام آباد میں متعدد ترقیاتی منصوبوں کے لیے 40 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں اور فراش ٹاؤن میں کم لاگت کے ہاؤسنگ یونٹس کی تعمیر کے لیے 2 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔

مزید برآں راول چوک کاریڈور کے لیے 60 ملین جبکہ مارگلہ ایونیو کی تعمیر کے لئے 10 ملین کی رقم مختص کی گئی ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔ 




حکومت کا اگلے بجٹ میں انفراسٹرکچر پر 509 ارب خرچ کرنے کا فیصلہ


Post Views:
0

اسلام آباد: وفاقی حکومت اگلے بجٹ میں انفراسٹرکچر پر 509 ارب روپے خرچ کرے گی جو کہ ترقیاتی منصوبوں کے لیے مختص 900 ارب کا 57 فیصد بنتا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بجٹ میں ترقیاتی منصوبوں کے لیے مختص رقم میں گزشتہ سال کے مقابلے میں 38 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔

بجٹ ڈاکومنٹ کے مطابق سوشل سیکٹر کو 169 ارب روپے ملیں گے جبکہ خصوصی علاقہ جات کے لیے 133 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔

علاوہ ازیں، آبی منصوبوں کے لیے 110 ارب روپے مختص کیے ہیں اور نیشنل ہائی وے اتھارٹی (این ایچ اے) کو روڈ پراجیکٹس کی مد میں 114 ارب روپے دیے جائیں گے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




حکومت کا اگلے بجٹ میں سی پیک کے لیے 55 ارب روپے مختص کرنے کا فیصلہ


Post Views:
2

اسلام آباد: حکومتِ پاکستان نے اگلے مالی سال کے بجٹ میں پاک چین اقتصادی راہداری (سی پیک) کے منصوبوں کے لیے 55 ارب روپے مختص کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

اب تک سی پیک منصوبوں پر حکومت 305 ارب سے زائد کی رقم خرچ کر چُکی ہے جبکہ ایم ایل ون پر 1.1 کھرب روپے خرچ کیے جائیں گے اور یہ منصوبہ 8 سال میں مکمل کیا جائے گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق حکومت نے اگلے مالی سال کے لیے پی ایس ڈی پی میں 25 سی پیک منصوبوں کا اندراج کیا ہے جن کا تعلق انفراسٹرکچر سے ہے۔

حکومتِ پاکستان کے تحت سی پیک منصوبوں کی کُل لاگت 1.6 کھرب روپے ہے جس میں اب تک متعدد منصوبوں پر 305 ارب روپے خرچ کیے جا چکے ہیں۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔




پنجاب کے لیے 400 ارب سے زائد کا ترقیاتی بجٹ متوقع


Post Views:
6

لاہور: پنجاب حکومت نے اگلے معاشی سال میں صوبے کے ترقیاتی منصوبوں کے لیے 400 ارب روپے مختص کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

یہ فیصلہ صوبائی وزیرِ خزانہ ہاشم جوان بخت کی زیرِ صدارت ایک اجلاس میں کیا گیا جس میں وزارتِ خزانہ کے متعلقہ افسران نے شرکت کی۔

تفصیلات کے مطابق یہ فیصلہ کیا گیا کہ اس معاشی سال میں معاشی نمو پر خصوصی توجہ دی جائے گی اور صوبے کے پسماندہ علاقوں کو ترقی کے یکساں مواقع فراہم کیے جائیں۔

صوبائی وزیرِ خزانہ کا کہنا تھا کہ اس بار زرعی پیداوار بڑھائی جائے گی اور کاروباری طبقے کو ٹیکس مراعات دیے جائیں گے۔

حکومت کا معاشرے کے نچلے طبقے کے لیے کم لاگت کے رہائشی منصوبوں پر کام کی رفتار تیز کرنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لیے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ۔