Ahmed Construction Company

Acco’s fast growing construction company based in Lahore, Pakistan. We undertake civil construction, interior designing & decoration and fabrication services of residential, institutional and commercial buildings throughout all over Pakistan. We are keen to carve a niche in the market by delivering high quality construction and engineering solutions within budgeted time and costs. Incepted in 1999, we develop high-end residential and commercial projects including villas, hotels, office complexes, malls etc and provide complete construction solutions. Acco has gained over 20 years of fruitful experience in civil and commercial construction industry.

icon_widget_image Monday-Friday: 9am to 9pm; Satuday: 10ap to 4pm icon_widget_image Office 24, 2nd Floor BigCity Plaza, Gulberg-III, Lahore icon_widget_image + (92) 322-8000-190 + (923) 111-749-849 icon_widget_image info@acco.com.pk ahmed@acco.com.pk

ایشیائی ترقیاتی بینک نے قومی شاہراہ کی  بحالیِ نو کیلئے 235 ملین ڈالر قرض کی منظور دے دی

ایشیائی ترقیاتی بینک نے قومی شاہراہ کی  بحالیِ نو کیلئے 235 ملین ڈالر قرض کی منظور دے دی

[ad_1]


Post Views:
1

اسلام آباد: ایشیائی ترقیاتی بینک (اے ڈی بی) نے پاکستان کیلئے 235 ملین ڈالر قرض کی منظور دی ہے۔ یہ رقم پاکستان کی نیشل ہائی ویز کو بہتر بنانے کے منصوبے پر خرچ کی جائے گی۔

ایشیائی ترقیاتی بینک کے اعلاميہ کے مطابق اس منصوبے سے قومی شاہراہ این 55 کے 222 کلومیٹر کے شکارپور – راجن پور سیکشن کو دو لین سے چار لین میں توسیع کی جائے گی۔ این 55 شاہراہ وسطی ایشیا علاقائی اقتصادی تعاون کوریڈور منصوبے کا حصہ ہے جو کہ کراچی اور گوادر بندرگاہوں کو قومی اور بین الاقوامی مراکز کے ساتھ منسلک کرتی ہے۔

بینک کے مطابق یہ منصوبہ سڑک کے حفاظتی نظام کو نافذ کرنے اور کسی بھی حادثہ کے بعد موثر رسپانس کو یقینی بنانے کے لیے بس اسٹاپس، ایمرجنسی رسپانس سینٹرز اور ٹریفک پولیس کی سہولیات کی تعمیر کرے گا۔

بس سٹاپس اور ایمرجنسی رسپانس سینٹرز میں استعمال کنندگان بشمول بوڑھے، خواتین، بچے اور معذور افراد کے لیے مختلف سہولیات اور آرام کی جگہیں شامل ہوں گی۔

مزید خبروں اور اپڈیٹس کے لئے وزٹ کیجئے گرانہ بلاگ




[ad_2]

Share this Post

Post a Comment